Hey guys in this article we've selected the most famous Urdu poetries for our American brother's and sisters.

urdu poetry lovely

دعائیں عمروں کی دینے والوں کو کیا خبر تھی
دراز عمری عذاب ہو گی
Duain Umero Ky Dene Walo Ko Kiya Khabr The
Daraz Umeri Azab Hoge

 

اٹھانا خود ہی پڑھتا ہے تھکا ٹوٹا وجود اپنا
جب تک سانس چلتی ہے کوئی کندھا نہیں دیتا
Uthana Khud He Parhta ha Thaka Toota Wajood Apna
Jab tk Sans Chlte Ha Koi Kandha Nahi Deta

غور کیا جب زندگی کے فلسفوں پر
بات مٹی سے شروع ہو کر مٹی میں جاملی
Gor Kiya Jab Zindagi Ky Falsafo Par
Baat Mitti Sy Shuru Ho Kar Mitti Mein Khatam

 

‏اب سمجھ لیتے ہیں میٹھے لفظ کی کڑواہٹیں
ہو گیا ہے زندگی کا تجربہ تھوڑا بہت
Ab Samjh Lete Hein Mitti Lafz Ky Karwahatein
Hogya Ha Zindagi Ka Tajurba Thora Bhut


 

جینا تو پڑے گا فقط دنیا کو دکھانے کے لئے ورنہ
ہم نے کب چاہی تھی اس کے بنا زندگی
Jena To Pare Ga Faqt Duniya Ko Dekhane Ky Lye Warna
Hum Ny Kab Chahe The Usky Bina Zindagi
 
ہو جیسے ایک ہی کنبے کی ساری آبادی
فضا ہمارے محلے کی گاؤں جیسی ہے
Ho Jese Ek He Kunbe Ky Sari Abadi
Fiza Hamare Muhalley Ky Gaao Jese Ha

 

محبت دو لوگ کرتے ہیں مگر
انتظار کسی ایک کے حصے میں آتا ہے
Muhabat Do Log Karte Hein Magr
Inztr Kese Ek Ky Hisse Mein Aata ha

 

یہ نہ پوچھ شکایتیں کتنی ہیں زندگئ سے
زندگئ بتا تیرا کوئی اور ستم باقی تو نہیں
Yeh Na Pouch Shikayatein Kitne Hein Zindagi Sy
Zindagi Bata Tera koi Or Sitam Baki To Nahi

 

تہذیب سکھاتی ہے جینے کا سلیقہ
تعلیم سے جاہل کی جہالت نہیں جاتی
Tehzeeb Sekhati Ha Jene Ka Saleka
Taleem Sy Jahil Ky Jahalat Nai Jati

 

ساری زندگی اداس رہنا ہے
سوچتا ہوں تو مسکراتا ہوں
Sari Zindagi Udas Rehna Ha
Sochta Ho Tu Muskurata Hu


 

جو سجائے رکھتے ہیں ہونٹوں پہ ہنسی کی کِرن
نہ جانے زندگئ میں کِتنےشگاف رکھتےہیں
Jo Sajaye Rakhte Hein Honto Py Hamsi Ky Kiran
Na Jane Zindagi Mein Kitnr Shagaaf Rakhte Hein

 

ہزار عشق کرو لیکن اتنا دھیان رہے
تمہں پہلی محبت کی بدعا نہ لگے
Hazar Ishq Karo Lekin Itna Dehan Rahe
Tumhein Phele Muhabat Ky Bad-Dua Na Lage

زندگی کب کی خاموش ہو گئی
دل تو بس عادتاً دھڑکتا ہے
Zindagi Kab Ky Khamoosh Ho Gye
Dil To Bs Aadatan Darakta Ha

 

بھوک پھرتی ہے میرے ملک میں ننگے پاؤں
رزق ظالم  کی تجوری میں چھپا بیٹھا ہے
شوق کلام لے گیا موسی کو طور پر
میں کتنا بد نصیب ہوں مسجد نہ جا سکا
Shoq Kalam Ly Gya Musa Ko Toor Par
Mein Kitna Badnaseeb Ho Masjid Na Ja Saka

 

کھیلتی ہے دکھوں کے ساتھ
زندگی بڑی شرارتی ہے
Khelte Ha Dukho Ky Sath
Zindagi Bare Sharariti Ha

 

ھمارے گاؤں کے باھر ھے ، شہر والی سڑک
وھاں بچھڑتی ھیں آنکھیں ، بچھڑنے والوں کی
Hamare Gao Ky Bhr Ha Shahr Wale Sarak
Wahan Bichrte Hein Aankhein Bichrne Walo Ky

 

‏میں اتنا نرم طبیعت، کہ یہ بھی چاہتا ہوں
جو آستین میں رہتے ہیں وہ بھی پل جائیں
Mein Itna Naram Tabyat Ky Yeh Bhe Chata Ho
Jo Aasteen Mein Rehte Hein Woh Beh Pal Jayn

 

راہ حیات کی تلخیاں پیتے پیتے
اب بہت کڑوے ہوگئے ہیں ہم
Rah E Hayat Ky Talkhiya Pete Pete
Ab Bht Karwe Ho Gye Hein Hum

 

 

بہکا تو بہت بہکا, سنبھلا تو ولی ٹھہرا
اِس خاک کے پُتلے کا ہر رنگ نرالا ہے
‏تم ابھی سانپ کو تو رہنے دو
آؤ، اک   آدمی   دِکھاتا   ہوں‎
Tum Abi Saanp Ko Rehne Do
Aao Ek Aadmi Dekhata Ho


Post a Comment

Please do not spam

Previous Post Next Post