دوستو آج کے آرٹیکل میں ہم آپ کے لئے بہت ہی زیادہ ٹھنڈی پوئٹری لے کر آئے ہیں جنہیں پڑھنے کے بعد آپ کا دل مچل جائے گا اور آپ کو بہت ہی زیادہ محبت کا احساس ہو گا ہماری اس پیشکش کو قبول کریے





بہت خوش رہتا ہوں آج کل میں

کیوں کی اب اُمید خود سے رکھتا ہوں دوسروں سے نہی




منزلیں مجھے چھوڑ گئی  راستوں نے سمهال لیا

زندگی تیری ضرورت نہیں مجھے دھڑکنوں نے سمہال لیا





تُجھے سکایت ہے کی مجھے بدل دیا وقت نے 

کبھی خود سے بھی تو سبال کر کیا تو وہی ہے





صرف ساسے چلتے رہنے کو زندگی نہی کہتے 

آنکھوں میں کچھ خواب اور دل میں اُمید ہونا ضروری ہے





سارے عام یہ سکھایت ہے مجھے زندگی سے 

کیوں ملتا نہی مزاج میرا کسی سے 




آرام سے تنہا کٹ رہی تھی تو اچھی تھی

زندگی تو کہا دل کی باتوں میں آ گئی




میں غلطی کرو تب بھی مجھے سینے سے لاگ لینا 

کوئی ایسا چاہیئے جو میرا ہر نکھرا اٹھا لے





 رہتے ہے آس پاس لیکن ساتھ نہی ہوتے 

 کچھ لوگ جلتے ہے مجھ سے لیکن خاک نہی ہوتے





دیوار کیا گیری میرے کچّے مکان کی فراز

لوگو نے آنے جانے کا راستہ بنا لیا




کون دیتا ہے عمر بھر کا صحارا فراز

لوگ تو زنازو میں بھی کندھے بدلتے رہتے ہے


Post a Comment

Please do not spam

Previous Post Next Post