sad poetry sms in urdu 2 lines text messages

sad poetry sms in urdu 2 lines text messages

دوستو آج کی اس آرٹیکل میں ہم آپ کو دینے جا رہے ہیں سینڈ ایس ایم ایس۔میں امید کرتا ہوں آپ کو یہ ہے سیڈ شاعری ا بہت زیادہ پسند آئیں گی۔آپ کو شاعری کے ساتھ میں انہیں جس بھی دی گئی ہیں جنہیں آپ ابھی استعمال کر سکتے ہیں۔


Youn He To Nahin Hoti Bheer Janazon Main,

Har Shakhs Acha Hai Chalay Jaanay Kay Bad!


یونہی تو نہں ہوتی بِھیڑ جنازوں مںش

ہر شخص اچھا ہے چلے جانے کے بعد




Is daur ke insanoon main wafa dhoond rahay ho

Baray nadaan ho zehar ki sheshe main dawa dhoond rahay ho


اِس دور کے انسانوں میں وفا ڈونڈ رہے ہو

بڑے ناداں ہو زہر کی شیشی میں دوا ڈونڈ رہے ہو




Barbaad Bastiyoun Main Kisay Dhoondtay Ho Tum ?

Ujray Howay Logon Kay Thikanay Nahin Hotay!


برباد بستوں میں کسے ڈھونڈتے ہو تم

اجڑے ہوۓ لوگوں کے ٹھکانے نہں ہوتے




Shaam hotay hi charaagon ko bujha daita hoon

Dil hi kaafi hay teri yaad main jalne ke liyay


شام ہوتے ہی چراغ کو بُھجا دیتا ہوں

دل ہی کافی ہے تیری یاد میں جلنے کے لیے



Mohabbat hoti to sanbhal layta kisi tareeqay

Ishq tha wo mera is liyay wjood kha giya mera


محبت ہوتی تو سنبھال لیتا کسی طریقے

اشک تھا ہو میرا اِس لیے وجود کھا گیا میرا




Zakham-e-ishq ki taab na la sakay

Hum ne jaan ganwa di jang-e-mohabbat main


زخمِ اشک کی تاب نا لا سکے ہم

ہم نے جاں گنوا دی جنگِ محبت میں


Kahan se layin her roz ik niya dil

Tordnay waloon nay to tamasha bana rakha hay


کہاں سے لاؤں ہر روز اک نیا دل

توڑنے والوں نے تو تماشہ بنا رکھا ہے



Mujhay kaha giya tha mehnat kerna

Afsoos! main ne nukta gira ker mohabbat kerli


مجھے کہا گیا تھا محنت کرنا

افسوس! میں نے نکتہ گِرا کر محبت کر لی۔


Ye jo doobi hain meri aankhain ashkon ke darya main

Ye matti ke insaano per bharosay ki saza hay


یہ جو ڈوبی ہیں میری آنکھیں اشکوں کے دریا میں

یہ مٹی کے انسانوں پر بھروسے کی سزا ہے



Tu ne daikha he nahi kabhe sath mere chal Ke,

Main hon tanhai ka bhi sath nibhane wala!


تو نے دیکھا ہی نہیں کبھی ساتھ مرے چل کے

میں ہوں تنہائی کا بھی ساتھ نبھانے والا





Salag Raha Hon Kaii Din Se Apnay He Andar Main,

Ab Jo Lab Kholon Ga To Bohot Tamasha Hoga!


سلگ رہا ہوں کئی دن سے اپنے ہی اندر میں

اب جو لب کھولوں گا تو بہت تماشا ہو گا


Ker raha hai gham jahan ka hisab,

Aaj tum yad be hisab aay.


کر رہا تھا غم جہاں کا حساب

آج تم یاد بے حساب آئے


Gham na ab khush hai na umeed ha na yas,

Sab se nijat paay zamane guzer gay.


غم ہے نہ اب خوشی ہے نہ امید ہے نہ یاس

سب سے نجات پائے زمانے گزر گئے



Chand kalian nishat ki chun ker mudaton mehwe yas rehta hon,

Tera milna khushi ki bat sahi tujh se mil ker udas rehta hon.


چند کلیاں نشاط کی چن کر مدتوں محو یاس رہتا ہوں

تیرا ملنا خوشی کی بات سہی تجھ سے مل کر اداس رہتا ہوں

Kabhi khud pe kabhi halat pe rona aaya,

Bat nikli tu her ek bat pe rona aaya.


کبھی خود پہ کبھی حالات پہ رونا آیا

بات نکلی تو ہر اک بات پہ رونا آیا




Ham tu koch dair hans bhi lety hain,

Dil hamaisha udas rehta hai.


ہم تو کچھ دیر ہنس بھی لیتے ہیں

دل ہمیشہ اداس رہتا ہے


Men hon dil ha tanhai ha,

Tum bhi hote acha hota.



 

میں ہوں دل ہے تنہائی ہے

تم بھی ہوتے اچھا ہوتا


Ye shukar ha kh mery pas tera gham tu raha,

Wagarna zindagi bher ko rula dia hota.


یہ شکر ہے کہ مرے پاس تیرا غم تو رہا

وگرنہ زندگی بھر کو رلا دیا ہوتا


Us ne pucha tha kia hal hai,

Aor men sochta reh gia.


اس نے پوچھا تھا کیا حال ہے

اور میں سوچتا رہ گیا








Post a Comment

0 Comments