maa ki yaad shayari in urdu

 



مانگ لو یہ منت کی پھر یہی جہاں میلے

پھر وہی گود پھر بھی ماں ملے



ماں کے لیے کیا لکھوں دوست

ماں نے مجھے خود لکھا ہے



بھوک تو ایک روٹی سے بھی مٹی جاتی ماں

اگر پلیٹ کی روٹیں  تیرے ہاتھ کی ہوتی



ماں نے اپنی درد بھری خط میں لکھا تھا

سڑکیں پکی ہیں اب تو گاؤں آیا کر


Post a Comment

0 Comments