sad status quotes in urdu | quotes on sadness in urdu

 sad status quotes in urdu | quotes on sadness in urdu






عشق کا تعلق جب روح سے ہو 
تو دیدار اے یار سے دل نہیں بھرتا




کتابوں میں کہیں پر نہ تھا عشق کا پتہ
یہ راز جس پہ کھولا راز ہی رہ گیا 







عشق کو دل میں داخل ہونے کے لیے 
دل تودبنہ شرت ہے غالب






عشق نازک مزاج ہے بےحد 
عقل کا بوجھ اٹھا نہیں سکتا







جو سفر موت پر ختم ہو
شاید وہی بلا عشق ہے مجھے







دیدار اے یار کے طلبگار ہیں ہم
قبول کرتے ہیں کی تیرے
 عشق میں گرفتار ہے ہم 






درد کی بات نہ ہی کرو غالب 
جسنے بھی دیا بےمثال دیا






بےبس سی آکھے ڈھونڈ رہی ہے تجکو 
کاش کی اس دنیا میں صرف تم ہی تم ہوتے





درد اے لذّت تمہیں کیا معلوم غالب
کوئی ہمس پوچھے کی عشق میں 
درد کا مقام کیا ہے




دل کو بس جستجو اے دیدار تیرا 
مجکو سونے نہی دیتا یہ دیدار تیرا

read more






تیرے دیدار پر اگر میرا اختیار ہوتا
تو یہ روز روز ہوتا بار بار ہوتا





دل میں شکایتوں کا قافلہ ہے
اور روح میں تم سے لپٹ جانے کی طلب






مسئلہ یہ نہیں کہ تیرے بنا جی نہیں سکتے
مدا یہ ہے کہ تیرے بنا جینا نہیں چاہتے





روح سے روح کا ملنا بھی بڑا عجیب ہوتا ہے
دو جسم الگ الگ لیکن باجود ایک ہی ہوتا ہے





روح تک پہچانے ناممکن نہیں غالب
بس ایک بار سچا عشق کر کے تو دیکھو






عشق کی بیماری لاعلاج ہوتی ہے
پتہ نہیں پھر بھی کیوں لاجواب ہوتی ہے





مرشد سے جب پوچھا عشق کی حد کیا ہے
تو مسکرا کے بولے محبوب کے محبوب سے بھی عشق کرو





میری آنکھ ترستی ہے تیری زیارت کو
جیسے شہر ترستے ہیں بارش کو





اس دل پہ تیری یادوں کا پہرہ ہے
تیرا عشق تیری دی ہوئی سجاؤ سے بھی گہرا ہے





تم نہیں ہو تو کتنا خلا رہا ہے
عشق کیا ہوتا ہے پتہ چل رہا ہے






تیری ہر بات محبّت میں غبارہ کر کے
دل کے بازار میں بیٹھے ہے کہشرا کرکے






مرشد سے کہا درد اے عشق کی دوا دو
حضرت نے مسکرا کے کہا اور عشق کرو






عمر نہ پوچھوں اُنکی جو 
عشق م ڈوبے رہتے ہیں
وہ ہر وقت جبا رہتے ہیں جو محبوب 
کی اخو میں کوہِ رہتے ہیں







اظہار اے عشق کے خاطر کئی الفاظ پوچھے تھے مینے
خود ہی کو بھول بیٹھے جب تم سامنے آئے


read more





جو کبھی محبت کے مرشد ہوا کرتے تھے
آج وہ خود عشق کے مرید بنے بیٹھے ہیں






اس قدر میری روح میں بس چکے ہو تم
خاموشی میں بھی مجھے تیرا نام سنائی دیتا ہے






اسے سوچ کر اٹھنا اسے سوچ کر سو جانا
کتنا آسان ہے نہ اسکا نہ ہوکر بھی ہو جانا






اب کاش میرے مرض کی کوئی دبا نہ ہو 
بڑتا ہی جائے یہ درد مسلسل کوئی صفحہ نے ہو






اپنے خیالوں میں حصہ پھر کسی کو نے دیا
عشق تیرے صبح بھی مینے پھر تُجھے سے کیا






انکے عشق کا سلسلہ بھی عجیب ہے غالب
اپنا بناتے نہی اور کسی کا ہونے نہی دیتے




تیرے عشق کا ہی تو نشا ہے 
میری روح تک میں جو بسا ہے





چلنے دو غالب سلسلہ دل داری کا
عشق تعلیم نہی کی مکمل ہو جائے



جو جینے کی وجہ ہے وہ بھی تیرا عشق ہے
اور جو جینے نہی دیتا وہ بھی تیرا عشق ہے





آرزو نہی ہے اب مجھے کسی اور کی
ایک تم ہی کافی ہو مجھے عمر بھر کے لیے




مجھے نہی پتہ کی عشق میرے لیے کیا ہے
بس چلتی ہے میری ساسے عشق اُسکی وجہ ہے




ہر رات یہی سوچتے سوچتے گزر جاتی ہے
کی عشق شجا ہے مجھ ہے رضا ہے




اظہار سے لٹا نہی لگتا تیرے عشق کا 
انتظار بتاتا ہے کی تیرا طلبگار کون ہے




زہر سے خطرناک ہے یہ نشا اے عشق
ذرا سے چک لے تو مر مر کے جیتا ہے




100+ poetry about life urdu Read more

50+ dard bhari shayari Urdu Read more

Ghalib poetry in urdu Read more



Post a comment

1 Comments

Please do not spam